Monday, 9 December 2013

دوسری قسط مجسٹریٹ کا انٹرویو

روزمرہ مسائل کے حوالے سے "ایک مجسٹریٹ کا انٹرویو" پیش کیا گیا  پوری دنیا میں موجود اردو زبان کے پڑھنے والوں نے اس کو پسند کیا ۔ پاکستان میں سرگرم عمل وکلاء تنظیموں نے پسند کیا  دوسری قسط میں تفصیل سے بات ہوگی صرف مسائل پر  ، ٹرانسفر کس طرح ہوتے ہیں پالیسی کیا ہے۔ کیا ججز پروموشن پالیسی سے مطمئن ہیں۔کیا  اقرباء پروری موجود ہے؟ اقرباء پروری کس حد تک ہوتی ہے، پروموشن کیلئے کارکردگی کو اہمیت دی جاتی ہے یا چاپلوسی کو ۔ ایم آئی ٹی  کس طرح متاثر کرتی ہے ۔ڈائرکٹ  تقرریوں میں ججز کو نظر انداز کرنے سے کس حد  تک مایوسی پھیلی ۔ ججز کس قسم کی پروموشن پالیسی چاہتے ہیں۔ ملزم عدالتوں سے کیوں  آزاد ہوجاتے ہیں۔ پولیس کی تفتیش ناقص ہے یا عدالتی نظام ۔عدلیہ کی بنیادی اکائی کو کس حد تک نظر انداز کیا گیا؟ مسائل کا حل ججز کیا سوچتے ہیں ۔ کیا سزا و جزا کا کوئی نظام موجود ہے ۔ اچھا کام کرنے والے کی تعریف ہوتی ہے یا آزمایئشوں سے گزرنا پڑتا ہے  ججز کے بچے کس طرح ٹرانسفر پالیسی کی وجہ سے تعلیمی مسائل کا شکار  رہتے ہیں  ایسے بہت سارے مسائل شیئر کیئے جائیں گے بہت جلد
Post a Comment